“Support Siraj Teli’s demand to outsource Karachi’s infrastructure development task to NDMA and FWO under army’s supervision.”

If you support, please be counted by filling the form

سراج قاسم تیلی کے اس مطالبے کی حمایت کریں کہ کراچی کے بنيادی ڈھانچے کی مرمت کا کام فوج کی نگرانی ميں ‘این ڈی ایم اے’ اور ‘ایف ڈبلیو او’ کو سپرد کرديا جاۓ۔

Chairman Businessmen Group (BMG) & Former President Karachi Chamber of Commerce & Industry (KCCI) Siraj Kassam Teli has demanded that the task to improve and develop the dilapidated infrastructure of Karachi should immediately be outsourced to National Disaster Management Authority (NDMA) and Frontier Works Organization (FWO) under Pak Army’s supervision for five years as it is beyond the capability/ capacity of all the concerned departments of the provincial set up and the local administration to deal with the worsening situation.

بزنس مین گروپ (بی ایم جی) کے چیئرمین و سابق صدر کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (کے سی سی آئی) سراج قاسم تیلی نے مطالبہ کيا ہے کہ کراچی کے تباہ حال انفراسٹرکچر کی بہتری اور ترقی کے کام کو پاک فوج کی زیر نگرانی 5 سال کے لیے فوری طور پر نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) اور فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او) کے حوالے کیا جائے- کیونکہ يہ بات یقینی ہے کہ صوبائی سطح پر تمام محکمے اور مقامی انتظامیہ بدترین صورتحال سے نمٹنے کی اہلیت اور سکت نہیں رکھتے-